شہری بابوئوں کی بھی پٹواریوں سے جان چھڑانے کا فیصلہ

لاہور(نیوز ڈیسک) پنجاب حکومت نے شہری بابوئوں کی بھی پٹواریوں سے جان چھڑانے کا فیصلہ کر لیا. حکومت دیہی کے بعد اب اربن موضع جات کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنے پروگرام بنا لیا ہے. ورلڈ بنک کے تعاون سے پنجاب اربن لینڈ انہانسمنٹ سسٹم کے زریعے اربن موضع جات کو کمپیوٹرائزڈ کیا جائے گا۔ پراجیکٹ مینجمنٹ یونٹ کے قیام کے لیے 41 کروڑ جاری کرنے کی سفارشات حکومت کو ارسال۔
تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کا ڈیجٹلائزیشن کی جانب بڑا قدم,دیہی اراضی کے بعد شہری اراضی کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا، اربن موضع جات کا تمام ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنے کے لیے ورلڈ بنک کے تعاون سے پنجاب اربن لینڈ انہانسمنٹ سسٹم متعارف کروایا جائے گا۔
پراجیکٹ کی مانیٹرنگ، ورکنگ ، ڈیزائننگ اور مینجمنٹ کے لیے پراجیکٹ مینجمنٹ یونٹ کا قیام کیا جائے گا،منصوبے کا مقصد اربن موضع جات کو کمپیوٹرائزڈ کر کے مالکانہ حقوق کا تحفظ، ریکارڈ ٹمپرنگ روکنا اور ریونیو اکھٹا کرنا ہے، اس سے قبل پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کی جانب سے دیہی موضع جات کو کمپیوٹرائزڈ کرنے کا کام مکمل کیا گیا۔
پنجاب بھر میں 152 اراضی ریکارڈ سنٹرز پر پانچ کروڑ پانچ لاکھ اراضی مالکان کو سروسز فرام کی جا رہی ہیں، پراجیکٹ مینجمنٹ یونٹ کے قیام اور فنڈز کی فراہمی کے لیے سفارشات حتمی منظوری کے لیے پنجاب حکومت کو ارسال کر دی گئیں ہیں ، 41 کروڑ کی لاگت سے منصوبے پر عملدرآمد کے لیے پراجیکٹ مینجمنٹ یونٹ بنایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں

فردوس عاشق کے خلاف مقدمے کیلئے درخواست دائر

لاہور(مانیٹرنگ سیل)پیپلز پارٹی کے رکن قومی اسمبلی قادر خان مندوخیل نے وزیراعلیٰ پنجاب کی معاون …