عدالت میں طوطے کی گواہی نے مالکن کو قاتل ثابت کردیا

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) طوطے کو رٹائے گئے جملے بظاہر تو انسانوں کو محظوظ کرتے ہیں ، بہت سے افراد مہمانوں کو خوش آمدیدی کلمات کہنے کے لئے طوطوں کا استعمال کرتے ہیں۔ بچپن میں اکثر لوگ طوطا مینا کی کہانیاں بھی سنتے ہیں، برصغیر میں طوطے کا استعمال فال نکالنے کے لئے کیا جاتا ہے، لیکن کیا آپ نے کبھی تصور کیا ہے کہ طوطا آپ کو پھانسی پر چڑھا سکتا ہے؟ جی ہاں ایسا ہو چکا ہے، امریکی ریاست مشی گن میں ایک طوطے نے اپنی مالکن کو قاتل کا مجرم ثابت کردیا ہے اور عدالت نے طوطے کی گواہی منظور کر لی .

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان ون ڈے اور ٹی ٹونٹی سیریز کا شیڈول طے پاگیا، قومی ٹیم دسمبر میں دورہ کرے گی
ترک ویب سائٹ کے مطابق امریکہ کی ریاست مشی گن میں گلینا ڈرام نامی عورت، اپنے گھر کے پالتو طوطے کی گواہی کے بعد ، اپنے شوہر کو 6 فائر کر کے قتل کرنے کی مجرم ثابت ہو گئی ہے۔مقتول مارٹن کی سابقہ بیوی کرسٹینا کیلیر نے دعوے کی پیشی کے دوران بیان دیتے ہوئے کہا کہ طوطا واقعے کی رات گھر میں موجود تھا اور بعد ازاں اس کی دیکھ بھال کی ذمہ داری اس نے اٹھا لی۔عدالت میں پیشی کے دوران بڈ نامی طوطا واردات والی رات میاں بیوی میں ہونے والی گفتگو کو دہراتا رہا اور مقتول کی آواز میں "فائر نہ کرو” کے الفاظ کہہ کر مالکن کو لے ڈوبا۔ کرسٹینا کے مطابق طوطا ان الفاظ کو دہراتے ہوئے اس کے سابقہ شوہر کی آواز کی تقلید کرتا ہے۔جیوری نے ایک دن کی پیشی کے بعد 49 سالہ گلینا ڈ±رام کو قتل کا مجرم قرار دے دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی فائرنگ سے مزید 3 کشمیری نوجوان شہید

سرینگر: بھارتی فوج نے مقبوضہ وادی میں ظلم و بربریت کا مظاہرہ کرتے ہوئے مزید …