نصرت فتح علی خان کو ہم سے بچھڑے 20برس گزر گئے

(میڈیا پاکستان ): سُروں کے بادشاہ، شہنشاہ قوالی نصرت فتح علی خان کی آج بیسویں برسی منائی جا رہی ہے۔ مرحوم کے گیت غزلیں اور قوالیاں آج بھی کانوں کو سُر سے واقف رکھتی ہیں۔
عالمی شہرت یافتہ قوال نصرت فتح علی خان 13 اکتوبر 1948ء کو فیصل آباد میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے نہ صرف ملکی بلکہ بین الاقوامی سطح پر اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا۔
نصرت فتح علی خان کا قوال کی حیثیت سے 125 آڈیو البم کا ایک ایسا ریکارڈ ہے، جسے توڑنے والا شاید دور دور تک کوئی نہیں، جن کی شہرت نے انہیں گینز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں جگہ دلوائی، نصرت فتح علی خان کو ہندوستان میں بھی بے انتہا مقبولیت ملی جہاں انہوں نے جاوید اختر، لتا منگیشکر، آشا بھوسلے اور اے آر رحمان جیسے فنکاروں کے ساتھ کام کیا۔
ٹائم میگزین نے 2006ء میں ایشین ہیروز کی فہرست میں ان کا نام بھی شامل کیاجبکہ 1992ء میں جاپان میں ان پر شہنشاہ قوالی کے نام سے ایک کتاب شائع کی گئی، پاکستان کے علاوہ کئی حکومتوں اور اقوام متحدہ نے انکی شاندار خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے متعدد سرکاری اعزازات سے نوازا۔
نصرت فتح علی خان کی20 ویں برسی پر انکے مداحوں کا کہنا ہے کہ نصرت فتح علی خان ہمارے دلوں میں زندہ ہیں، ہم انھیں کبھی نہیں بھول سکتے۔

یہ بھی پڑھیں

سینئر اداکار سہیل اصغر انتقال کرگئے

لاہور: پاکستان کے سینئر اداکار سہیل اصغر انتقال کرگئے۔ اہلیہ نے سہیل اصغر کے انتقال …