امریکی سائنسدانوں کا کار نامہ کبھی خراب نہ ہونے والی بیٹری تیار

نیویارک(ٹیکنالوجی ڈیسک/ میڈیا92 نیوز)امریکی سائنسدانوں نے ایسی بیٹری تیار کی ہے جو لاکھوں بار چارچ ہونے پر بھی خراب نہیں ہوتی ۔کیلیفورنیا یونیورسٹی کے محققین نے گولڈ نانووائرز کی کو ٹنگ سے ایسی بیٹری تیار کی ہے جسے اسمارٹ فونز ،ٹیبلٹس ،گاڑیوں ،کمپیوٹر اور خلائی جہازوں میں استعمال کیا جا سکتا ہے ،اس سے ڈیوائسز کی زندگی طویل کرنے میں مدد ملے گی جواب چند برس بعد ختم ہو جاتی ہے ۔”نانو وائرز “ایسی چیز ہے جو انسانی بال سے ہزاروں گنا زیادہ پتلی ،بہت زیادہ کنڈیکٹو اور زیادہ سر فیس ایریا رکھتی ہے ۔لنیتھیم کی بیٹریاں جو آج کل زیادہ تر سمارٹ فونز میں استعمال ہو رہی ہیں ،بھی نانووائرز سے تیار ہوتی ہیں مگر بار بار چارج ہونے کے باعث وہ خراب ہو جاتی ہیں ۔اب امریکی محققین نے شیل اور جیل دونوں پر نانو وائرس کی کو ٹنگ کر کے ان کے بکھیرنے کے خطرے کی روک تھام کی ہے ۔اب تک سائنسدان تین ماہ کے عرصے میں دو لاکھ بار چارج کرنے کا تجربہ کر چکے ہیں اور اس پر کسی قسم کا نقصان دیکھنے میں نہیں آیا ۔محققین کے مطابق اس وقت مارکیٹ میں دستیاب بیٹریاں عام طور پر 7 ہزار بار چارج کرنے پر ختم ہونا شروع ہو جاتی ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں

ایپل کا تھرڈ پارٹی ایپس کے حوالے سے اہم اقدام

کیلیفورنیا: ٹیکنالوجی کمپنی ایپل نے یورپی یونین کی جانب سے جاری کیے جانے والے ڈیجیٹل مارکیٹس …