احد چیمہ کی گرفتاری پر سرکاری افسران کا احتجاج اور دفاتر کی تالہ بندی کیخلاف لاہورہائیکورٹ سے رجوع۔

لاہور(کورٹ رپورٹر/میڈیا92نیوز) ایل ڈی اے کے سابق ڈائریکٹر جنرل احد چیمہ کی گرفتاری پر سرکاری افسران کا احتجاج اور دفاتر کی تالہ بندی کے خلاف لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کر لیا گیا ہے اور درخواست میں نشاندہی کی گئی ہے کہ سرکاری ملازم کسی شخصیت کے نہیں بلکہ ریاست کے ملازم ہیں.تفصیلات کے مطابق مقامی شہری ہمایوں فیض رسول نے اظہر صدیق کے توسط سے لاہور ہائیکورٹ میں دائر کی کی جس میں احد خان چیمہ کی گرفتاری پر سرکاری افسروں کے احتجاج اور دفاتر کی تالہ بندی کو چیلنج کیا گیا ہے. درخواست میں یہ اعتراض اٹھایا گیا کہ سرکاری افسران نے سول سیکریٹریٹ دفاتر کی تالہ بندی کرکے اپنے حلف کی پاسداری نہیں کی درخواست گزار کے وکیل نے قانونی نکتہ اٹھایا کہ سول سیکرٹریٹ کا دفاتر کو تالے لگانا اور احتجاج کرنا غیر قانونی ہے کیونکہ رولز کے تحت سول افسران نے شخصیات کے نہیں ریاست کے ملازم ہیں درخواست گزار نے استدعا کی کہ احتجاج کرنے اور دفاتر کو تالا لگانے والے افسران کے کیخلاف کارروائی کی جائے درخواست میں یہ بھی استدعا کی گئی ہے کہ مینجمنٹ سروسز کے ملازمین کو ہڑتال نہ کرنے پر ہراساں نہ کیا جائے اور پنجاب حکومت کو حکم پابند کیا جائے کہ نیب کی کارروائیوں میں مداخلت نہ کریں.

یہ بھی پڑھیں

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب کا روڈا اور سی بی ڈی پنجاب میں سفری سہولیات کے لئے نئے نظام کی تشکیل کا فیصلہ

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب نے عصر حاضر کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے روڈا اور …