وفاقی حکومت نے عدالت میں بے نظیر بھٹو قتل کیس کا فیصلہ چیلنج کردیا

راولپنڈی(میڈیا پاکستان) وفاقی حکومت نے بے نظیربھٹوقتل کیس کا فیصلہ لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا۔نجی نیوز چینل ایکسپریس نیوزکے مطابق سابق صدر آصف علی زرداری اور سزا پانے والے مجرمان کے بعد وفاقی حکومت نے بھی بے نظیربھٹوقتل کیس کا فیصلہ لاہور ہائی کورٹ کے راولپنڈی بینچ میں چیلنج کردیا ہے۔ وفاقی حکومت کی جانب سے وکیل بھی تبدیل کردئیے گئے ہیں اوراب سابق پراسیکیوٹرز کی جگہ اسسٹنٹ اٹارنی جنرل فیصل محمود راجا نئے وکیل مقررکر دیئے گئے۔
درخواست میں موقف اختیار کیا گیاہے کہ فیصلے میں انصاف کے تقاضے پورے نہیں کئے گئے۔ رفاقت ،حسنین، شیرزمان، عبدالرشید اوراعتزاز شاہ کو سزائے موت دی جائے اور سعود عزیز، خرم شہزاد کی سزاﺅں میں اضافہ کرکے پھانسی کی سزا میں تبدیل کیا جائے۔
حکومت کے پاس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کرنے کا آج آخری دن تھا جب کہ حکومتی اپیلوں کی سماعت 2 اکتوبرکو جسٹس طارق عباسی اور جسٹس حبیب اللہ عامر پر مشتمل ڈویثرن بینچ کرے گا۔واضح رہے کہ اس سے قبل آصف زرداری اور مقدمے میں سزا یافتہ پولیس افسران سعود عزیز اور خرم شہزاد نے بھی فیصلے کے خلاے اپیلیں دائر کررکھی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ ڈرا ہوگیا

 کراچی: پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دو میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ …