ایکسپائر ہونے کے قریب اشیاء کی درآمد پر پابندی

لاہور(میڈیا پاکستان) ایکسپائر اشیاء درآمد کرکے تاریخ بدل کر بیچنے کے معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے فوڈ اتھارٹی نے ایف بی آر کے ساتھ مل کر اشیاء خوردونوش کی درآمد کا قانون وضع کردیا۔ ایکسپائر ہونے کے قریب اشیاء خوردونوش کی درآمد پر مکمل پابندی عائد کرتے ان کی کسٹم کلیئرنس کے بعد کم سے کم ایکسپائری مدت نصف باقی ہونا لازم قرار دیدیا۔ ترجمان فوڈ اتھارٹی نے بتایا ایسی اشیاء جن کی کلیرنس کے وقت مدت استعمال نصف سے کم عرصہ رہ جائیگی۔ نہیں بیچنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ خلاف ورزی کرنے والی کمپنیوں کا امپورٹ لائسنس کینسل کردیاجائیگا۔ اس حوالے سے ایف بی آر کا قانون پہلے ہی موجود ہے تاہم اس ضمن میں فوڈ اتھارٹی نے گزشتہ چند ماہ میں کئی بڑے سٹورز کے سپلائرز اور وئیر ہاوسز سے ایکسپائر امپورٹڈ اشیاء پکڑی تھیں اور ان کی فروخت سامنے آنے کے بعد مذکورہ پابندی لگانے کا فیصلہ کیا گیا ۔ اس حوالے سے فوڈ اتھارٹی نے تمام سٹیک ہولڈرز، امپورٹرز اورسٹور مالکان کو انتباہ جاری کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ ڈرا ہوگیا

 کراچی: پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دو میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ …