وزیراعظم کے استعفے کے لئے کوئی سڑکوں پر نہیں نکلے گا، نواز شریف کو اڈیالہ جیل میں دیکھ رہا ہوں : عمران خان

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نے آج اپنی تقریر کے دوران جے آئی ٹی اور سپریم کورٹ کو براہ راست دھمکیاں دی ہیں، پانامہ کیس کی تحقیقات کو حکومت کے خلاف سازش کہا جا رہا ہے حالانکہ پانامہ کیس بین الاقوامی انکشاف تھا اس پر ہم نے کوئی سازش نہیں کی انہیں انکشافات پر پوری دنیا میں کرپشن کے خلاف جدوجہد شروع ہوئی ، آئس لینڈ نے500ارب ڈالر ریکور کئے ۔،ملک میں کوئی جنگ و جندل کی ضرورت نہیں،وزیر اعظم سے میں استعفیٰ مانگ رہا ہوں اور نہ ہی استعفے کے لئے سڑکوں پر نکلوں گا، اب یہ کیس سپریم کورٹ میں ہے اور میں نواز شریف کو انہیں اڈیالہ بھیجنا چاہتا ہوں۔

ہاکی ٹیم کی ناقص کارکردگی ، مینجمنٹ اور سلیکشن کمیٹی تحلیل، پی ایچ ایف نے نئی کمیٹی تشکیل دے دی
پاکستان تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ پرویز خٹک کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اب حکمران گو نواز گو کے نعرے سے خوف زدہ ہوکر عوامی مقامات پر جانے سے گریزاں ہیں، وزیر اعظم تکبر میںمبتلا ہو چکے ہیں آپ کو شرم نہیں آرہی کہ احتساب کا پوچھنے پر آپ دھمکیاں دیتے ہیں ۔وزیر اعظم کے خلاف نیب میں12کیسز ہیں اور ہم ان سے کرپشن کا احتساب کر رہے ہیں ، جمہوری نظام میں وزیر اعظم عوام کو جوابدہ ہیں۔شریف خاندان کے خلاف تازہ دستاویزات ہم نے نہیں دیں بلکہ دبئی کی حکومت نے دی ہیں، وزیر اعظم پر کرپشن کے الزامات ہیں اور وہ ہم سے پوچھتے ہیں کہ آپ پر الزام کیا ہے۔سپریم کورٹ میں جھوٹ بولا گیا یہ بھی بڑا جرم ہے ۔ حکمران عوامی احتجاج کا خوف دلا کر اداروں کو دھمکا رہے ہیں۔جب مشرف نے ان کی حکومت گرائی تھی توایک آدمی سڑک پرنہیں آیاتھا۔وزیر اعظم اب صرف نا اہل نہیں ہوں گے بلکہ ان کا کمرا اڈیالہ جیل میں تیار ہو چکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

پٹرولیم مصنوعات ایک بار پھر مہنگی ہونے کا امکان

وگرا نے قیمتوں میں 10 روپے فی لٹر تک اضافے کی سمری ارسال کردی، حتمی …