پنجاب پولیس کورواں مالی سال کے پہلے تین ماہ کیلئے35ارب سے زائد کے فنڈزجاری

لاہور(میڈیا پاکستان) صوبائی محکمہ خزانہ کی جانب سے پنجاب پولیس کو مالی سال2017-18کے پہلے تین ماہ کیلئے35ارب روپے سے زائد کے فنڈزجاری کردئیے گئے ہیں۔34ارب11کروڑ 56لاکھ اور ایک ہزار روپے کے فنڈ ز آئی جی پنجاب کیپٹن(ر)عارف نواز خان کی منظوری کے بعد جاری کیے گئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق فنڈزکی عدم دستیابی کے باعث شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑرہا تھا جس کے باعث پنجاب پولیس کے متعدد ترقیاتی کام روک دئیے گئے تھے جبکہ پٹرول بھی ادھار لینا پڑتا تھا۔ پولیس افسران بھی پٹرول نہ ہونے کے باعث اپنی جیب سے پٹرول ڈلوارہے تھے۔ آئی جی پنجاب کی جانب سے سفارش کی گئی تھی کہ جلد فنڈز جاری کئے جائیں تاکہ اس بحران کی سی کیفیت کو دور کیاجاسکے۔ ذرائع کے مطابق فنڈز مختلف ہیڈز میں جاری کئے گئے جن میں تنخواہوں کیلئے15ارب ،26کروڑ،22لاکھ اور42ہزار روپے، ملازمین کے ریگولر الاؤنسز کی مد میں15ارب،22کروڑ،82لاکھ اور20ہزار ، وردیوں کے لئے4کروڑ، 61لاکھ اور70ہزار روپے، ٹریولنگ الاؤنس کی مد میں11کروڑ53لاکھ 35ہزار روپے، سٹیشنری کی مد میں8کروڑ، 61لاکھ اور78ہزار روپے، پولیس افسران کے دفاتروں اور تھانوں کی بلڈنگز کے کرائے کی مد میں 3کروڑ،62لاکھ،18لاکھ اور78ہزار روپے، پولیس افسران کے دفاتروں اورتھانوں کی بلڈنگز کے کرائے کی مد میں3کروڑ،62لاکھ اور25ہزار روپے، بجلی کے بلوں کی مد میں 31کروڑ،86لاکھ اور11ہزار ، گیس کے بلوں کی مد میں 22کروڑ،43لاکھ اور 37ہزار پانی کے بلوں کی مد میں 39لاکھ اور6ہزار ، ٹیلی فونز کے بلوں کی مد میں11کروڑ،85لاکھ اور30ہزار روپے،پوسٹیج اینڈ ٹیلی گراف کی مد میں23لاکھ اور99ہزار روپے، ٹرانسپورٹ کی مد میں11کروڑ،40لاکھ اور75ہزار روپے،ماڈل ٹاؤن پولیس سٹیشنز کیلئے3کروڑ اور4لاکھ روپے، دوران ڈیوٹی کھانے کیلئے ایک کروڑ43لاکھ اور68ہزار روپے، ماڈل پولیس سٹیشنز کیلئے3کروڑ اور4لاکھ روپے، دوران ڈیوٹی کھانے کیلئے ایک کروڑ،43لاکھ اور68ہزارروپے، ٹینٹ اورترپال کیلئے ایک کروڑ25لاکھ اور10ہزار روپے ، محرم ڈیوٹی کے لئے6لاکھ اور75ہزار روپے، سپورٹس کی مد میں 22لاکھ اور50ہزار روپے، ملازمین کی مالی امداد کیلئے25لاکھ روپے،سکالر شپ کیلئے76لاکھ اور50ہزار ، انٹرٹیمنٹ اورتحائف کی مد میں18لاکھ روپے، کیش ایوارڈ کی مد میں58لاکھ اور 5ہزار روپے، کاسٹ آف انویسٹی گیشن کی مد میں12کروڑ،88لاکھ اور 16ہزار روپے، روڈ سیفٹی کمپین کی مد میں75لاکھ اور60ہزار روپے، ملازمین کی ریٹائرمنٹ کی مد میں41کروڑ،17لاکھ اور50ہزار روپے، کمپیوٹرسٹیشنری کی مد میں4کروڑ،61لاکھ اور25ہزار روپے،اینٹی رائیٹ ڈیپو کیلئے76لاکھ اور40ہزار روپے،ادویات کی مد میں22لاکھ اور5ہزار روپے، کمپیوٹرائزڈ ڈرائیورنگ لائسنس کے سامان کی خریداری کی مد میں50لاکھ اور99ہزارروپے، آنسو گیس کے شیلوں کی خریداری کی مد میں5لاکھ 85ہزار روپے اور اسلحہ ڈیپور کیلئے4لاکھ اور5ہزار روپے کے فنڈز جاری کردئیے گئے ہیں۔ فنڈز جاری ہونے کے محکمہ پولیس کے التوا کا شکار ہونے والے ترقیاتی منصوبوں پر کام شروع ہوگیاہے۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ ڈرا ہوگیا

 کراچی: پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دو میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ …