لاہور ہائیکورٹ میں قائداعظم محمد علی جناح کی ملکیتی جائیداد کی حفاظت کے حوالے سے مقدمہ درج

لاہور(میڈیا پاکستان) لاہور ہائیکورٹ نے قائداعظم محمد علی جناح کی ملکیتی جائیداد کی حفاظت کو یقینی بنانے کیلئے دائر درخواست کے قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔ درخواست گزار رانا علم الدین غازی ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ ممبئی انڈیا میںقائداعظم کی جائیدادیں جن میں کوٹھی، بنگلے موجود ہیں بھارتیوںنے قبضہ جمارکھاہے۔ بانی پاکستان کی نجی جائیداد کو اس کی اصل شکل میں برقرار رکھنے اور ناجائز قابضین سے واگزار کرانے کے لئے بھارتی حکومت نے کوئی اقدامات نہیں کئے۔ انہوںنے کہا کہ بانی پاکستان کی جائیداد واگزار کرانے کے لئے حکومت پاکستان بھی خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہی ہے۔ لہٰذا فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ حکومت پاکستان کو قائداعظم کی نجی پراپرٹی کے تحفظ کیلئے قانونی اقدامات کرنے کا حکم جاری کرے جس پر فاضل عدالت نے ریمارکس دئیے کہ اس طرح کے معاملات اور پراپرٹی کی حفاظت کرنا حکومت کی پالیسیوں کا حصہ ہوتے ہیں۔ درخواست گزار کو اس معاملہ پر پہلے حکومت پاکستان کے فورم سے رجوع کرنا چاہیے تھا۔ فاضل عدالت نے دائر درخواست کے قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ ڈرا ہوگیا

 کراچی: پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دو میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ …