حکمران شوکت خانم ہسپتال پر بے بنیاد الزام تراشی نہ کریں: عمران خان

(میڈیا پاکستان ): چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ این اے 120 کا ضمنی الیکشن فیصلہ کرے گا کہ کون مجرم کے ساتھ کھڑا ہے اور کون آئین اور قانون کے ساتھ۔ کھڑا ہے پی ٹی آئی آخری گیند تک مقابلہ کرے گی۔
چیئرمین سیکرٹریٹ میں یونین کونسل کے نمائندوں سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہاکہ این اے 120 کے ضمنی الیکشن کی تیاری کرلی ہے۔ کارکن عوام کو بتائیں کہ مسلم لیگ (ن) کو ووٹ دیں گے تو آپ کرپٹ لوگوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔
عمران خان نے کہاکہ نواز شریف نے عدالت میں جھوٹ بولا۔ انہیں بے گناہی ثابت کرنے کے لیے ایک سال دیا گیا لیکن انہوں نے عدالت میں جعلسازی کی۔ وہ نادان لوگ ہیں جو نوازشریف کا پروپیگنڈا قبول کریں گے۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ نوازشریف عدالتوں کا فیصلہ نہیں مانتے،عام آدمی کیسے مانے گا۔ نوازشریف کی عدلیہ کے خلاف تقریر اداروں کو تباہ کرنے کے مترادف ہے۔ ہم سپریم کورٹ کے ساتھ کھڑے ہیں۔
علاوہ ازیں پی سی میں شوکت خانم ٹرسٹ کے زیراہتمام شوکت خانم سوشل رسپانسبیلٹی ایوارڈ شو کی تقریب میں بطورمہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حکومت تحقیقات کرائے اگر شوکت خانم کے فنڈز میں گھپلا ہوا تو مجھے جیل بجھوا دیں۔عوام کو طبی سہولیات فراہم نہ کرنے والے فلاحی ادارے پر بے بنیاد الزام تراشی نہ کریں۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ دنیا میں کوئی ہسپتال ایسا نہیں جہاں شوکت خانم کی طرح مفت علاج ہو۔ شوکت خانم کا سالانہ خسارہ500 کروڑ ہے۔ جس کو پورا کرنے میں عوام کا ہاتھ ہوگا۔ لاہور اور پشاور کے بعد کراچی میں کینسر کا ہسپتال بنا رہے ہیں۔
کپتان کا کہنا تھا کہ دنیا میں جنگوں کے دوران بھی ہسپتالوں پر حملے نہیں ہوتے۔ سمجھ نہیں آتی سیاسی مخالف اور( ن) لیگی وزراء کینسر ہسپتال پر کیوں حملے کرتے ہیں۔ حکومت نے کینسر کا کوئی متبادل ہسپتال نہیں بنایا ۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ بیگم کلثوم کے لیے دعا گو ہوں۔ ایل ڈی اے شوکت خانم کے نقشوں میں رکاوٹ ڈال رہا ہے۔ یہ میری کوئی ذاتی شوگر مل یا فیکٹری نہیں۔ بجلی کنکنشنز کے لیے بھی رکاوٹیں پیدا کی جا رہی ہیں۔
سی ای او شوکت خانم ڈاکٹر فیصل سلمان کا کہنا تھا کہ مر یضوں کی تعداد اور سہولیات کے پیش نظر شوکت خانم لاہور کو دوگنا کیا جا رہا ہے۔
گلوکار علی ظفر کا کہنا ہے شوکت خانم ہسپتال 75 فیصد مریضوں کا علاج مفت کر رہا ہے۔ تقریب میں گلوگار علی ظفر، سی ای او شوکت خانم ڈاکٹر فیصل سلطان،سی ایم او شوکت خانم ڈاکٹر محمد عاصم یوسف، رہنما تحریک انصاف نعیم الحق،صدر سنٹرل پنجاب عبدالعلیم خان سمیت دیگر رہنماوں اور کارپوریٹ سیکٹر کے نمائندوں نے شرکت کی۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ ڈرا ہوگیا

 کراچی: پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دو میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ …