ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد(میڈیا92نیوز) ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف کی درخواست پر فیصلہ محفوظ ہوگیا.
اسلام آباد کی احتساب عدالت نے نوازشریف کی جانب سے ان کی واپسی تک فیصلہ مؤخر کرنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے سماعت ایک گھنٹے کے لیے مؤخر کردی۔
احتساب عدالت کے جج محمد بشیر ایک گھنٹے بعد سماعت کرکے اس درخواست پر فیصلہ سنائیں گے، جس کے بعد ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس کا فیصلہ سنایا جا سکے گا۔
نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کی جانب سے وکیل امجد پرویز نے عدالت کے روبرو استدعا کی کہ میاں نواز شریف کی اہلیہ کلثوم نواز کی حالت تشویشناک ہے اور نواز شریف کی لندن میں موجودگی ضروری ہے ۔
امجد پرویزنے مزید کہا کہ ڈاکٹرز کے مطابق آئندہ 48گھنٹے تک فیملی کا کلثوم نواز کے ساتھ ہونا ضروری ہے۔
اس موقع پر نیب پراسیکیوٹرنے کہا کہ جب کیس فیصلے کے لیے مقرر ہے اس مرحلے پر اس کو مؤخر کرنے کی درخواست نہیں دی جاسکتی،فیصلہ محفوظ کرنے سے قبل درخواست دی جاسکتی تھی۔
جس پر امجد پرویز نے کہا کہ قانون کہتا ہے کہ فیصلے کے وقت ملزم کی موجودگی ضروری ہے۔
عدالت نے فیصلہ مؤخر کرنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے سماعت کو ایک گھنٹے کے لیے مؤخر کردیا۔

یہ بھی پڑھیں

عام انٹرنیٹ سے 45 لاکھ گُنا تیز انٹرنیٹ

برمنگھم: سائنس دانوں نے انٹرنیٹ اسپیڈ کا نیا ورلڈ ریکارڈ قائم کیا ہے جو موجودہ براڈ …