فرانس: بس اسٹاپ پر کھڑے لوگوں پر گاڑی چڑھادی گئی،خاتون ہلاک

پیرس: فرانس کے ساحلی شہر مارسے میں ایک شخص نے 2 بس اسٹاپ پر کھڑے افراد پر اپنی تیز رفتار کار چڑھادی جس کے نتیجے میں ایک خاتون جاں بحق جبکہ ایک شخص زخمی ہوگیا۔
فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق ڈرائیور نے فرانس کے ساحلی شہر مارسے کے دو مختلف بس اسٹاپس پر کھڑے لوگوں کو اپنی گاڑی سے نشانہ بنایا۔
مقامی پولیس حکام نے اے ایف پی کو بتایا کہ اس واقعے میں ملوث مشتبہ ڈرائیور کو گرفتار کرلیا گیا اور اس کی گاڑی بھی قبضے میں لے لی گئی۔
پولیس ذرائع نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر اے ایف کو بتایا کہ وہ اس واقعے کی نوعیت کے بارے میں تحقیقات کے بعد بتائیں گے کہ یہ ایک کار حادثہ ہے یا پھر دہشت گردی کا واقعہ۔
خیال رہے کہ رواں ماہ کے دوران یورپ میں مختلف مقامات پر کار حادثے اور چاقو سے وار کرنے کے کئی پُرتشدد واقعات پیش آئے جن میں متعدد افراد ہلاک ہوئے۔
گذشتہ ہفتے اسپین کے شہر بارسلونا کے ضلع لاس رَمبلاس میں ایک نامعلوم شخص نے ایک وین سڑک کنارے کھڑے لوگوں پر چڑھادی تھی جس کے نتیجے میں 13 افراد ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہوگئے تھے، لاس رمبلاس کا علاقہ اسپین میں سیاحت کے حوالے سے معروف ہے۔
کچھ ہی گھنٹوں بعد اسی نوعیت کا دوسرا واقعہ بارسلونا سے 120 کلومیٹر جنوب میں واقع کامبریل میں پیش آیا جہاں ایک گاڑی پیدل چلنے والے افراد پر چڑھا دی گئی، جس کے نتیجے میں 6 افراد زخمی ہوئے۔
اس سے قبل رواں ماہ 9 اگست کو بھی فرانس کے دارالحکومت پیرس کے مضافات میں پیڑولنگ کرنے والے سپاہیوں پر نامعلوم ڈرائیور نے کار چڑھا دی تھی جس کے نتیجے میں 6 اہلکار زخمی ہوگئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ ڈرا ہوگیا

 کراچی: پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دو میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ …