میسی اور نیمار اب مٹائیں گے بچوں کی بھوک


لندن (سپورٹس ڈیسک/میڈیا92نیوز )ورلڈکپ فٹ بال نہ صرف دنیا بھر کے تین ارب سے زائد افراد کو سنسنی خیز لمحات اور خوشیاں فراہم کرے گا بلکہ اس سے لاکھوں بچے بھوک مٹاسکیں گے اور سرطان کے مریضوں کو بھی علاج کے بہتر سہولتیں میسر آسکیں گی۔ اقوام متحدہ کے ورلڈ فوڈ پروگرام نے دنیا کی معروف کریڈٹ کارڈر کمپنی کے ساتھ مشترکہ پروگرام شروع کیا ہے جس کے تحت ارجنٹائن کے اسٹار لیونل میسی اور برازیل اسٹرائیکر نیمار کا کیا گیا ہر گول لاطینی امریکا اور جزائر کیریبین میں 10ہزار بچوں کھانا کھلایا جائے گا۔ میسی نے اس موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ مجھے یہ سن کر بہت خوشی ہوئی ہے۔ اس مہم کا حصہ بننے پر فخر ہے۔ نیمار نے اپنے پیغام میں کہا کہ متحد ہو کر ہم بھوک سے لڑسکتے ہیں۔ دوسری جانب انگلینڈ کے دو فٹ بال پرستار سائیکل پر روس کیلئے چل پڑے ہیں۔ وہ ورلڈ کپ کے میچز دیکھنے کیلئے تقریباً 3900 کلومیٹر کا فاصلہ طے کریں گے۔ انگلینڈ کے جنوبی حصے میں واقع گائوں ایمس ورتھ سے تعلق رکھنے والے جیمی میریٹ اور مچ کو امید ہے کہ وہ 18 جون کو انگلینڈ کے تیونس کے خلاف افتتاحی میچ

کے موقع پر والگاگراڈ اسٹیڈیم میں موجود ہوں گے۔ جیمی اور مچ سائیکل پر روس تک سفر صرف فٹ بال ورلڈ کپ سے لطف اندوز ہونے کیلئے نہیں کررہے وہ اس دوران کینسر ریسرچ فائونڈیشن کیلیے عطیات بھی اکھٹے کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں

کوئٹہ: اے این ایف کی بڑی کارروائی، سوا 2 ٹن منشیات پکڑ لی، 4 اسمگلرز گرفتار

میڈیا 92 نیوزڈسک اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف ) انٹیلی جنس نے کوئٹہ میں …