پاکستان نے تاریخی ٹیسٹ میچ جیت لیا


ڈبلن (سپورٹس ڈیسک/میڈیا92نیوز) پاکستان کرکٹ کی نئی نوجوان بریگیڈ نے مضبوط اعصاب کا ثبوت دیتے ہوئے انہونی کو ٹال دیا۔ آئرلینڈ کے خلاف اولین ٹیسٹ میں گرین کیپس نے پانچ وکٹ سے کامیابی حاصل کی۔ امام الحق نے ناقابل شکست 74رنز اسکور کیے۔ بابر اعظم نے بھی ففٹی اسکور کی۔ فاسٹ بولر محمد عباس نے مجموعی طور پر 9کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ میزبان ٹیم نے پاکستان کو 160رنز کا ہدف دیا تھا۔ پاکستانی بولرز کے خلاف دونوں اننگز میں مزاحمت کرنے والے کیون اوبرائن میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔ انہوں نے پہلی اننگز میں40 اور دوسری میں118رنز بنائے۔ میچ کے پانچویں روز آئرلینڈ نے 7وکٹوں کے نقصان پر 319رنز سے اپنی دوسری اننگز شروع کی لیکن اس کے آخری تینوں کھلاڑی محض 20 رنز کا اضافہ کرسکے اور پوری ٹیم 339 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی۔ ہدف کے تعاقب میں پاکستان کا آغاز بھیانک تھا۔ تین وکٹیں صرف 14رنز پر گرگئیں۔ اظہر علی 2، حارث سہیل 7 اور اسد شفیق صرف ایک رن بناکر پویلین لوٹ گئے۔ تاہم بابر اعظم اور امام الحق نے126 رنز کی شراکت قائم کرکے جیت کی بنیاد رکھی۔ بابر اعظم140کے

مجموعی اسکور پر 59رنز بناکر رن آؤٹ ہوگئے۔ کپتان سرفراز دو چوکوں کی مدد سے آٹھ رنز بنا کر ایل بی ڈبلیو ہوئے۔ سرفراز کے بعد شاداب خان کریز پر آئے اور میچ کو منطقی انجام تک پہنچایا۔ لیفٹ آرم بیٹسمین امام الحق 74 اور شاداب خان 4 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔ ٹم مرٹاغ نے دو جبکہ رینکن اور تھامپسن نے ایک ایک وکٹ لی۔ خیال رہے کہ پاکستان نے پہلی اننگز میں 310رنز بنائے، جواب میں آئرش ٹیم 130 رنز بناکر فالو آن کا شکار ہوئی اور دوسری بیٹنگ میں 339رنز اسکور کیے۔ دریں اثنا پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہا ہے کہ آئر لینڈ کو ہرانے کے بعد اب ہماری نظریں انگلینڈ کے خلاف لارڈز ٹیسٹ پر ہیں۔ پاکستانی ٹیم اس چیلنج پر پورا اترنے کے لئے تیار ہے۔ کوشش کریں گے کہ توقعات پورا کریں۔ ڈبلن ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں کنڈیشن بیٹنگ کے لئے سازگار نہیں تھیں۔ لیکن صورتحال کے مطابق امام الحق اور بابر اعظم نے بہت اچھی بیٹنگ کی۔منگل کو میچ کے بعد سرفراز احمد نے اعتراف کیا کہ دوسری اننگز میں تین وکٹ گرنے کے بعد ہمیں تشو یش لاحق تھی۔ پورا کریڈٹ امام الحق اور بابر اعظم کو جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سری لنکا کے خلاف136 رنز کے ہدف کے تعاقب میں ہم ٹیسٹ ہار گئے تھے۔ آئرلینڈ فالو آن کراتے ہوئے ہمارے ذہن میں سوالات تھے لیکن ہمیں امید تھی کہ نوجوان ٹیم کو جو بھی ہدف ملا اسے حاصل کرلیں گے۔لیکن تین وکٹ گرنے پر گھبرائے ہوئے تھے۔ انگلینڈ کے خلاف اظہر علی اور اسد شفیق سے بڑی امید وابستہ ہیں۔ ادھر آئرلینڈ کے کپتان ولیم پورٹ فیلڈ نے کہا کہ اگر دو سو رنز کا ہدف ہوتا تو ہم مزید قریب آسکتے تھے ۔

یہ بھی پڑھیں

کوئٹہ: اے این ایف کی بڑی کارروائی، سوا 2 ٹن منشیات پکڑ لی، 4 اسمگلرز گرفتار

میڈیا 92 نیوزڈسک اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف ) انٹیلی جنس نے کوئٹہ میں …