ضرورت پڑی تو عمران سے انتخابی اتحاد کرینگے : زرداری

لاہور(میڈیا92نیوز) سابق صدر مملکت آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ جمہوریت ایک نظریہ ہے جو نواز شریف کو سمجھ نہیں آیا پہلے بھی کہہ چکا ہوں کہ نواز شریف نے جمہوریت کو بہت نقصان پہنچایا ہے، بھٹو اور شہید بینظیر نے جان دے کر اور میں نے 11 سال جیل کاٹ کر جمہوریت کو مضبوط کیا۔ نواز شریف نے شہزادہ سلیم اور مغل بادشاہ بن کر ہماری جدوجہد ضائع کی اور جمہوریت کو نقصان پہنچایا۔ اس وقت ہم ایک کمزور جمہوریت کو لیکر چل رہے ہیں، ایسے وقت میں کچھ بھی ہو سکتا ہے۔ سابق صدر آصف علی زرداری گزشتہ روز صدر پیپلز پارٹی پنجاب ویمن ونگ ثمینہ خالد گھرکی کی رہائش گاہ پر گئے اور ان کی والدہ بلقیس بیگم کے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا۔ بعدازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آصف علی زرداری نے کہا کہ نواز شریف نے ہمارے اور ملک کے ساتھ جو کچھ کیا اس سے بڑا سانحہ اور کیا ہو سکتا ہے۔ اس سوال کے جواب میں کہ میاں نواز شریف کہتے ہیں کہ آپ عمران سے ہاتھ ملا چکے ہیں، آصف زرداری نے کہا کہ ضرورت کے تحت سینٹ الیکشن میں ملے تھے ضرورت ہوئی تو عام انتخابات میں بھی اتحاد کریں گے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ عام انتخابات کے بعد دیکھیں گے کہ ہم نے کس کے ساتھ بیٹھنا ہے یہ لوگ جلدی میں ہیں ہمیں کوئی جلدی نہیں ہے۔ اگر حکومت نہ بنا سکے تو پھر اپوزیشن میں بیٹھ جائیں گے۔ ہمارے لئے اپوزیشن میں بیٹھنا کوئی نئی بات نہیں ہے۔ حکومتوں میں رہ چکے صدر بھی بن چکے ہم نے سب کچھ دیکھا ہوا ہے۔ ایوان صدر بھی دیکھا ہے اور وزیراعظم ہاﺅس بھی دیکھا ہے، ان کو وہاں جانے کی جلدی ہے جنہوں نے نہیں دیکھا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خلائی مخلوق کی تشریح تو نواز شریف خود ہی کر سکتے ہیں۔ نواز شریف خود خلائی مخلوق کے ساتھ رہے ہیں اور خلائی مخلوق کے ہاتھ میں ہاتھ دے کر یہاں تک پہنچے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 1988ءمیں انہوں نے ان سے مل کر ہمارے خلاف اتحاد بنایا تھا۔ آصف زرداری نے کہا کہ چھانگا مانگا میں جنرل حمید گل اور دوسرے اداکار ہمارے خلاف اور نواز شریف کے ساتھ تھے۔ یہ ساری وہ ”مخلوق“ ہے جو کہ ہمارے خلاف استعمال ہوتی رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنا ہے کہ سپریم کورٹ نے اصغر خان کیس دوبارہ کھول دیا ہے، اس کیس میں بھی نواز شریف کا اہم کردار تھا۔ انہوں نے کہا کہ ابھی جو چھوڑ گیا وہ پیدائشی جیالا تو نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ بلاول اور میری سیاست میں فرق تو ہے بلاول کی سیاست 29 سالہ نوجوان کی سیاست ہے اور میں 60 سال سے زیادہ کا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ گرمی ہے رمضان بھی مگر انتخابات وقت پر ہونے چاہئیں اور ہوں گے۔ میڈیا میں میری باتوں کی غلط تشریح کی گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب کا روڈا اور سی بی ڈی پنجاب میں سفری سہولیات کے لئے نئے نظام کی تشکیل کا فیصلہ

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب نے عصر حاضر کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے روڈا اور …