حکومت مخالف مقدمات میں وکیل اظہر صدیق کے دفتر سے اہم ریکارڈ غائب کروا دیا گیا..

(میڈیا 92 نیوز)سانحہ ماڈل ٹاون، 56 کمپنیوں، پانامہ کیس اور حکومت مخالف مقدمات میں پیش ہونے والے معروف قانون دان اظہر صدیق کے دفتر سے اہم دستاویزات اور لیپ ٹاپ غائب کرا دئیے گئے، نامعلوم شخص نقب لگا کر لیپ ٹاپ اور قیمتی دستاویزات لے اڑے۔

قانون دان اظہر صدیق ایڈووکیٹ کے دفتر میں ہونے والے واقعہ کی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ دیوار میں سوراخ کرنے کے بعد نامعلوم شخص دفترمیں داخل ہوا اور لیپ ٹاپ کے علاوہ قیمتی دستاویزات لے کر رفو چکر ہوگیا، واقعہ سے قبل ایک دوسری فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک شخص اپنے موبائل کیمرے سے قانون دان اظہر صدیق کے دفتر کے چکر لگاتے ہوئے فوٹیج اور تصاویر بنانے میں مصروف ہے۔


فوٹیجز سے ظاہر ہوتا ہے کہ واردات کرنے والے شخص کو معاونت فراہم کی گئی، افسوس ناک واقعہ سے متعلق بات کرتے ہوئے اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ واقعہ سوچی سمجھی سازش اور مختلف مقدمات کی پیروی سے باز رہنے کی دھمکی ہےکیونکہ اسلام آباد ایئر پورٹ پر پرویز رشید نے مجھے سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دیں تھیں جس کے چند دن بعد دفتر سے حکومت مخالف مقدمات کا ریکارڈ غائب کروایا گیاہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ واقعہ سے قبل کی جانے والی ریکی سے سارے معاملے کی قلعی کھل جاتی ہےاور وہ کسی قسم کی دھمکیوں کو خاطر میں نہیں لائیں گے، یاد رہے کہ ا س سے قبل بھی دو بار قانون دان اظہر صدیق کے دفتر میں چوری کی واردات ہو چکی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب کا روڈا اور سی بی ڈی پنجاب میں سفری سہولیات کے لئے نئے نظام کی تشکیل کا فیصلہ

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب نے عصر حاضر کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے روڈا اور …