اینٹی کرپشن تشدد، فتح جھنگ سنگھ اے ڈی ایل آر اور سروس سنٹر انچارج کی گرفتاری پر کی جانے والی ہڑتال نیا رخ اختیار کرگئی


لاہور(میڈیا92نیوز رپورٹ )
اینٹی کرپشن تشدد، فتح جھنگ سنگھ اے ڈی ایل آر اور سروس سنٹر انچارج کی گرفتاری پر کی جانے والی ہڑتال نیا رخ اختیار کرگئی۔ صوبے بھر کے اراضی ریکارڈ سنٹر کے سٹاف یکجا موقف موقف پر اکٹھے ہوگئے۔ ہمیں مستقل کیا جائے، ڈیٹا انٹری کے دوران کی جانے والی عجات ،غفلت، اغلاط کا فا رنزک آڈٹ کیا جائے، آفس ٹائمنگ کے بعد کیے جانے والے کام کا معاوضہ دیا جائے۔ ہمیں سکیورٹی دی جائے تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے، ہڑتال میں شدت اراضی ریکارڈ سنٹر سٹاف اپنے حقوق کےلئے میدان میں آگئے میڈیا92نیوز کو ملنے والی معلومات کے مطابق گزشتہ دنوں فتح جھنگ سنگھ میں اینٹی کرپشن کی جانب سے اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ اور سروس سنٹر انچارج پر کیے جانے والے تشدد، گرفتاری اور تذلیل پر جہاں صوبے بھر کے ملازمین سراپا احتجاج بن کر ہڑتال پر جاچکے ہیں

اوراینٹی کرپشن سے مطالبہ کررہے تھے کہ ہمارے بے گناہ ساتھیوں کو رہا کیاجائے یہ ٹیکنیکل غلطی ہے جس میں ہمارا کوئی قصور نہ ہے تاہم جسے جسے ہڑتال میں شدت اور اضافہ چلا جارہا ویسے ویسے اب ہڑتال نے ایک نیا رخ اختیار کرلیا ہے اور صوبے بھر کے ملازمین اپنے10سال سے کیے جانے والے موقف پر اکٹھے ہوچکے ہیںاور نئی صورتحال کے مطابق اب ہڑتال اور احتجاج اینٹی کرپشن کے علاوہ پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کی انتظامیہ کے خلاف بھی کیا جارہا ہے تمام اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ، سروس سنٹر انچارج اور سروس سنٹر آفیشل نے پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی سے مطالبہ کیا ہے کہ ہمیں مستقل کیا جائے۔ ہمارے سروس سٹریکچر رولز مکمل کیے جائیں۔ ڈیٹا انٹری کے دوران اغلاط سے بھرا ہوا ریکارڈ کا فرانزک کروایا جائے۔ آفس ٹائمنگ کے بعد کیے جانے والے کام کا معاوضہ دیا جائے۔

ہمیں سکیورٹی دی جائے، تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے، محکمہ اینٹی کرپشن کی بے جا مداخلت کو روکا جائے،ہماری عزت نفس کو مجروح نہ کیا جائے۔ یکطرفہ موقف پر نوکریوں سے نکالے جانے والے ملازمین کو بحال کیا جائے اور پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کی جانب سے کی جانے والی انتقامی کارروائیوں کو فوری طور پر روکا جائے ۔ اراضی ریکارڈ سنٹر کے ملازمین کی کثیر تعداد نے مطالبات کی منظوری تک ہڑتال جاری رکھنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ دوسری جانب پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی نے بھی ملازمین کے اس مطالبے کی روشنی میں کمیٹی تشکیل دیدی ہے جو کہ ان مطالبات کی روشنی میں کام شروع کرے گی۔

یہ بھی پڑھیں

عام انٹرنیٹ سے 45 لاکھ گُنا تیز انٹرنیٹ

برمنگھم: سائنس دانوں نے انٹرنیٹ اسپیڈ کا نیا ورلڈ ریکارڈ قائم کیا ہے جو موجودہ براڈ …