سابق وزیر اعظم نواز شریف کے انتخابی حلقے این اے 120 کے ضمنی انتخاب میں غیر مصدقہ ووٹوں کی تنسیخ کیلیے درخواست

(میڈیا 92 نیوز) لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے انتخابی حلقے این اے 120 کے ضمنی انتخاب میں غیر مصدقہ ووٹوں کی تنسیخ کیلیے درخواست پر تحریک انصاف کے وکیل کی عدم دستیابی کی وجہ کارروائی موخر کر دی. تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس امین الدین خان نے تحریک  انصاف  کی رہنما اور کلثوم نواز کے مدمقابل امید وار  یاسمین  راشد  کی درخواست پر سماعت کی  جس این اے 120 میں 28 ہزار غیر مصدقہ ووٹوں کی نشاندہی کی گئی ہے. درخواست گزار کے وکیل کی عدم دستیابی کی وجہ پیش نہیں ہوسکی.درخواست گزار رہنما نے موقف اختیار کیا کہ این  اے ایک سو بیس کے ضمنی انتخاب میں اٹھائیس ہزار غیر مصدقہ ووٹ ڈالے گئے.  الیکشن کمیشن  نے بھی  ان  ووٹوں کوغیر مصدقہ  تسلم  کیا لیکن انہیں منسوخ کئے بغیر انتخابات کرائے۔درخواستگزار نے نشاندہی کی کہ  اگر غیر مصدقہ ووٹ منسوخ ہوجاتے  تو انتخابی نتائج مختلف ہوتے لیکن الیکشن کمیشن نے ووٹوں منسوخ نہیں کیے. درخواست گزار نے استدعا کی کہ این اے 120 میں غیر مصدقہ ووٹوں کو خارج کیا جائے.عدالت نے کیس  2 مئی تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین کے وکلا کو بحث کے لیے طلب کر لیا. 

یہ بھی پڑھیں

عام انٹرنیٹ سے 45 لاکھ گُنا تیز انٹرنیٹ

برمنگھم: سائنس دانوں نے انٹرنیٹ اسپیڈ کا نیا ورلڈ ریکارڈ قائم کیا ہے جو موجودہ براڈ …