17اضلاع کے پاپولیشن افسرون کو ہٹانے کے لیے دائر درخواست کو قبل از وقت قرار دے کر مسترد .

(میڈیا 92 نیوز) لاہور ہائی کورٹ نے 17اضلاع کے پاپولیشن افسرون کو ہٹانے کے لیے دائر درخواست کو قبل از وقت قرار دے کر مسترد کر دیا ہے عدالت نے قرار دیا ہے کہ ابھی ماجود حکومت نے اپنی مدت پوری نہیں کی ہے تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عائشہ اے ملک شالامار کے رہائشی عزیز احمد کی درخواست پر سماعت کی درخواست مین وفاقی و صوبائی حکومت اور الیکشن کمیشن آف پاکستان کو فریق۔بنایا گیا ہے درخواست گزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ ڈسٹرکٹ پاپولیشن افسر 12۔12سالون سے اپنے ہوم ڈسٹرکٹ میں تعنیات ہیں حکومت کی پالیسی کے تحت ہر 3 سال بعد نئی پوسٹنگ ضروری ہے درخواست گزار وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ابھی تک ان ڈسٹرکٹ افسرون کو تبدیل نہی کیا گیا ہے جبکہ پاپولیشن افسر عام الیکشن مین نتایج پر اثر انداز ہو سکتے ہیں درخواست میں عام الیکشن سے قبل ڈسٹرکٹ افسرون کو فوری تبدیل کرنے کی استدعا کی گئی ہے جسٹس عائشہ اے ملک دوران سماعت ریماکس دیے کہ درخواست گزار متعلق فریق نہیں ہے عدالت نے قرار دیا کہ ابھی ماجود حکومت نے اپنی مدت پوری نہیں کی ہے اس لیے یہ درخواست قبل از وقت ہے لاہور ہائیکورٹ نے درخواست گزار کے متاثرہ فریق نہ ہونے اور درخواست کو قبل از وقت قرار دے کر مسترد کر دیا ہے

یہ بھی پڑھیں

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب کا روڈا اور سی بی ڈی پنجاب میں سفری سہولیات کے لئے نئے نظام کی تشکیل کا فیصلہ

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب نے عصر حاضر کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے روڈا اور …