نواز شریف کو پارٹی اجلاس کی صدارت سے روکنے کیلئے درخواست قابل سماعت قرار

اسلام آباد(میڈیا پاکستان نواز شریف کو پارٹی اجلاسوں کی صدارت سے روکا جائے ، لاہور ہائیکورٹ نے شہری کی درخواست قابل سماعت قرار دیدی ، عدلیہ مخالف بیانات دینے پر توہین عدالت کی درخواست پر سماعت 18 اگست کو ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو پارٹی صدارت سے روکنے کے لئے شہری محمد امین کی درخواست کی سماعت کی۔

عدالت نے الیکشن کمیشن ، وزارت قانون کو 21 ستمبر تک جواب جمع کرانے کا حکم دیدیا ، عدالت عالیہ میں نواز شریف کیخلاف توہین عدالت کی درخواست پر سماعت جسٹس مامون الرشید شیخ کی۔

ایڈووکیٹ شاہد رانا نے توہین عدالت کی درخواست دائر کی تھی جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ نااہلی کے بعد نواز شریف نے عدلیہ مخالف بیانات دیئے ، نواز شریف کی میڈیا کوریج پر بھی پابندی لگائی جائے۔

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ ایک ہی درخواست میں دونوں باتوں کی کیسے استدعا کر سکتے ہیں ، میڈیا کوریج پر پابندی کیلئے پیمرا سے رجوع کر سکتے ہیں جس پر درخواست گزار نے میڈیا کوریج پر پابندی کی استدعا واپس لے لی۔

درخواست گزار کے وکیل نے دلائل کیلئے عدالت سے مہلت کی استدعا کی جس کو عدالت نے منظور کرتے ہوئے سماعت اٹھارہ اگست تک ملتوی کر دی۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ ڈرا ہوگیا

 کراچی: پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دو میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ …