نورمقدم کو قتل سے قبل زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، فرانزک رپورٹ میں انکشاف

اسلام آباد: نورمقدم فرانزک کیس کی فرانزک رپورٹ میں قتل سے پہلے مقتولہ کے ساتھ زیادتی کا انکشاف ہوا ہے۔

اسلام آباد پولیس کو نور مقدم کیس کی فرانزک رپورٹ موصول ہوگئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ مقتولہ نور مقدم کا پوسٹ مارٹم قتل سے 12 گھنٹے بعد کيا گيا، ملزم ظاہر جعفر کا ڈی اين اے اور فنگرپرنٹس وقوعہ سے حاصل نمونوں سے میچ کرگئے ہیں، قتل ميں استعمال ہونے والے چاقو پر ملزم ظاہر جعفر کی انگلیوں کے ہی نشانات ہيں، اس کے علاوہ سی سی ٹی وی فوٹيج ميں نظرآنے والا شخص ملزم ظاہرجعفراور نورمقدم ہی ہیں۔

فرانزک رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ نور مقدم کا پوسٹ مارٹم قتل سے 12 گھنٹے بعد کيا گيا، ظاہر جعفر نے قتل سے پہلے مقتولہ سے زیادتی بھی کی اور مقتولہ نور مقدم پر بدترين تشدد کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں

طالبان نے کابینہ کی تقریب حلف برداری منسوخ کردی

دوحہ: ترجمان طالبان سہیل شاہین نے کابینہ کی تقریب حلف برداری منسوخ کرنے کا اعلان …