مالک مکان نے 8سالہ گھریلو ملازمہ کوقتل کردیا

فیصل آباد: کام چھوڑ کر جانے کی رنجش پر مالک مکان نے 8 سالہ گھریلو ملازمہ کو تشدد کرتے ہوئے مویشیوں کے چارے والی کھرلی میں پھینک کرقتل کردیا۔

پولیس نے لاش قبضے میں لیکر ملزم کی تلاش شروع کردی۔ تفصیل کے مطابق نواحی گاؤں611گ ب کے رہائشی نسیم حسین کی 8 سالہ بیٹی طیبہ چک نمبر444گ ب سمندری کے رہائشی محسن ضیا کے گھر میں ملازمہ تھی جو چند دن پہلے بغیر بتائے کام چھوڑ کر چلی گئی ،جس کے بعد مالک مکان محسن ضیا نے اس کے گھر والوں کی منت سماجت کرکے طیبہ کودوبارہ اپنے گھر کام پر رکھا۔

گذشتہ روز کام چھوڑ کر جانے کی رنجش کی بناء پر محسن ضیاء نے طیبہ کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے گھر سے ملحقہ حویلی مال مویشیاں میں لے جاکر چارہ ڈالنے والی کھرلی میں اٹھاکر مارا جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہوگئی جسے طبی امداد کے بعد ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ دم توڑگئی، اطلاع ملنے پر صدر سمندری پولیس نے موقع پر پہنچ کر مقتولہ کی نعش قبضہ میں لیکر پوسٹمارٹم کیلیے ہسپتال منتقل کردی اور فرار ہونیوالے مالک محسن ضیاء کی تلاش کیلیے چھاپے مارنے شروع کردیئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

روس کی یونیورسٹی میں طالب علم کی فائرنگ سے 8 افراد ہلاک

ماسکو: روس کی یونی ورسٹی میں طالب علم نے فائرنگ کرکے 8 افراد کو قتل …