ڈیپ فشنگ کے لائسنس صرف پاکستانیوں کو جاری کریں گے، علی زیدی

کراچی: وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے کہا ہے کہ ڈیپ فشنگ کے لائسنس کسی غیر ملکی کو نہیں صرف پاکستانیوں کو ہی جاری کریں گے، ماہی گیر کسی ایک کی سزا پاکستان کو نہ دیں۔

کراچی میں اپنے حلقہ انتخاب این اے 244 گلستان جوہر میں لگائے گئے ویکسی نیشن کیمپ میں صحافیوں سے گفت گو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان میری ٹائم سیکیورٹی ایجنسی (پی ایم ایس اے) بہت اچھا کام کر رہی ہے، اگر کوئی ایک غلط کام کر دے تو سب برے نہیں ہوتے، ماہی گیروں کا مسئلہ حل کرنے کے لیے مشترکہ اجلاس بلایا ہے سب مل کر مسائل حل کریں گے، اٹھارویں ترمیم کے بعد 12 ناٹیکل مائل پر کام کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ ڈیپ سی کے لائسنس تو ہم نے کسی کو دیئے ہی نہیں، لائسنس دیں گے تو پاکستانی ماہی گیروں کو ہی دیں گے، ماہی گیروں سے مذاکرات کے لیے محمود مولوی صاحب گئے ہیں، ماہی گیروں نے کسٹمز اور پی ایم ایس اے کے خلاف احتجاج کیا، ماہی گیروں کا احتجاج میری ٹائم کے خلاف نہیں تھا۔
پورٹ قاسم کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ پورٹ قاسم نے 2017ء میں 6 ارب منافع کمایا، جب کہ 2020ء میں 20 ارب ٹیکس جمع کرایا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ سال کی نسبت اس سال کورونا وائرس نے مجھے زیادہ تکلیف ہوئی، قوم سے اپیل کرتاہوں کہ ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بناتے ہوئے ویکسی نیشن کروائیں، احتیاط کریں اور ماسک ضرور پہنیں، ہم نے اپنے حلقے میں اب تک 70 ہزار کے لگ بھگ ویکسین لگائی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

روس کی یونیورسٹی میں طالب علم کی فائرنگ سے 8 افراد ہلاک

ماسکو: روس کی یونی ورسٹی میں طالب علم نے فائرنگ کرکے 8 افراد کو قتل …