امتحان میں نمبر کم آنے پر سفاک باپ کے تشدد سے بیٹی ہلاک

عمان:
اردن میں بدبخت باپ نے امتحان میں کم نمبر آنے پر اپنی 24 سالہ بیٹی کو تشدد کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں طالبہ کی موت واقع ہوگئی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اردن کے اسپتال میں البلقا ایپلائیڈ یونیورسٹی میں ہیومن سائنسز کی طالبہ کی لاش لائی گئی۔ لاش پر بے پناہ تشدد کے نشانات تھے اور پوسٹ مارٹم رپورٹ میں انہی زخموں کو 24 سالہ لڑکی کی موت کی وجہ قرار دیا گیا ہے۔

یونیورسٹی کی طالبہ کی لاش چچا لے کر آئے تھے جنہوں نے بتایا کہ لڑکی کو تشدد کا نشانہ بنانے والا بے رحم شخص کوئی اور نہیں اس کا باپ ہے۔ پولیس نے باپ کو حراست میں لے کر عدالت میں پیش کردیا۔

سفاک باپ نے اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ امتیازی نمبر لانے والی بیٹی جب اس بار کم نمبر لیکر آئی تو غصے میں آگیا اور اس کی پٹائی کردی تاہم مجھے اندازہ نہیں تھا کہ اس سے بیٹی کی موت واقع ہوجائے گی۔

عدالت نے ملزم کو 15 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔

یہ بھی پڑھیں

پڑھائی کے دوران وقفہ، حافظے کےلیے مفید قرار

جرمنی: قریباً 100 برس قبل جرمن ماہرِ نفسیات، ہرمن ایبنگہاس نے اپنی معرکتہ آلارا کتاب …