ٹرانسپورٹروں کے پروسیسنگ کے کروڑوں وصول، رپورٹ نیب کو بھیجنے کا فیصلہ

لاہور(شیخ مبشر حسین/میڈیا92نیوز)لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی کی جانب سے ٹرانسپورٹروں سے سالانہ کروڑوں روپے پروسیسنگ فیس کی مد میں وصل کرنے کے حوالے سے حساس اداروں نے رپورٹ تیار کرلی ہے جسے جلد نیب کو بھجوایا جائے گا ، گزشتہ کئی سالوں سے ایل ٹی سی کی جانب سے وصول کی جانے والی فیسوں سے صرف افسران پانی تنخواہیں ودیگر اخراجات کررہے ہیں جس کا تاحال آڈٹ تک نہیں ہونے دیا گیا ، انتہائی ناقص کارکردگی کی بنا پر متعلق کمپنی کو 2بار بند کردینے کا فیصلہ کیا گیا

لیکن پر کشش سیٹوں پر بیٹھنے افسران نے سیاسی اثرور سوخ کی بنا پر فیصلہ موخر کرایا ۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت کی جانب سے2009میں میں لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی قائم کی جسے 900بسوں اور4ہزار ویگنوں کو دیا گیا اور تارگٹ دیا گیا کہ وہ لاہور میں اربن سسٹم کو بہتر کریں گے جس میں بسوں کی تعداد کو2500جبکہ ویگنوں کی تعداد میں بھی آبادی کے حساب سے بڑھائیں گے تاکہ عوام کی معیاری سفری سہولیات فراہم کی جاسکیں لیکن وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ اس کمپنی میں سیاسی بنیادوں پر رکھے جانے والے افسران نے بھاری تنخواہوں کے مزے لئے جبکہ ٹرانسپورٹ سسٹم کی صورت حال بدترین ہوتی گئی

اور اس وقت بھی لاہور میں بسوں کی تعداد 250کے قریب ہے جبکہ ویگنیں اب500سے600تک رہ گئی ہیں جبکہ شہری خوار ہوتے دکھائی دیتے ہیں ۔ سیاسی افراد کے نام اور نواز کی رپورٹ کو بھی حتمی شکل دی گئی۔

یہ بھی پڑھیں

حمزہ شہباز کی رہائی عثمان بزدار کے لئے خطرہ ،ڈاکٹر طارق فضل نے اندر کی بات بتادی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما اور سابق وزیر مملکت ڈاکٹر طارق …