سعودی بادشاہ نے روہنگیا مسلمانوں کیلئے خزانے کے منہ کھول دیے

ریاض (میڈیا پاکستان) خادم حرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے مصائب کے شکار روہنگیا مسلمانوں کی مدد کیلئے ڈیڑھ کروڑ امریکی ڈالر کی امداد جاری کرنے کا حکم دیا ہے۔ سعودی پریس ایجنسی کو دیئے گئے انٹرویو میں سعودی شاہی دفتر کے مشیر اور کنگ سلمان سینٹر فار ہیومنیٹیرین ایڈ اینڈ ریسکیو کے نگرانِ عام ڈاکٹر عبدالعزیز الربیعہ نے بتایا کہ سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ڈیڑھ کروڑ امریکی ڈالر مختص کرنے کی ہدایت کی ہے ، یہ رقم میانمار میں نسل کشی اور تشدد کے سبب فرار ہونے والے روہنگیا مسلمان مہاجرین پر خرچ کی جائے گی۔
انہوں نے کہا کہ خادم حرمین شریفین کی جانب سے میانمار کے آفت زدہ مہاجرین کی امداد کے سلسلے کی کڑی ہے جس کا مقصد مسلمان بھائیوں کے دکھوں میں کمی لانا اور ان کو ہر قسم کی انسانی امداد فراہم کرنا ہے۔شاہ سلمان کی ہدایات جاری ہونے کے بعد آئندہ چند گھنٹوں میں کنگ سلمان سینٹر کی ٹیم بنگلہ دیش روانہ ہو جائے گی تا کہ روہنگیا مسلمانوں کے حالات سے آگاہی حاصل کی جا سکے۔جس کے بعد ان کے لیے فوری نوعیت کی ہنگامی امداد روانہ کی جائے گی۔
انہوں نے بتایا کہ رمضان المبارک میں سعودی عرب کی جانب سے میانمار میں راکھائن کے علاقے میں غذائی مواد پر مشتمل 19 لاکھ 40 ہزار 400 باسکٹ تقسیم کیے گئے جن سے ایک لاکھ 16 ہزار 424 افراد مستفید ہوئے۔انہوں نے کہا کہ انٹرنیشنل آرگنائزیشن آف امیگریشن کے تعاون سے راکھائن سے نقل مکانی کرنے والے افراد کو مختلف شہروں میں بسایا گیا جبکہ اس سلسلے میں 35 دیہاتوں کے ساٹھے 17 ہزار افراد کو معاونت پیش کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں

چینی فوج کیساتھ جھڑپ میں بھارتی فوجی پسپا ہونے پر مجبور؛ متعدد زخمی

 ریاست اروناچل میں ایل اے سی کے قریب چین کی فوج کے ساتھ جھڑپ میں …