رائےونڈ ہسپتال میں خاتون کا سڑک پربچہ کا جنم دینے کی انکوائری مکمل

لاہور(میڈیا 92نیوز رپورٹ) رائےونڈ ہسپتال میں خاتون کا سڑک پربچہ کا جنم دینے کی انکوائری مکمل کرلی گئی۔ سابق ایم ایس ڈاکٹر عامر مفتی اور گائناکالوجسٹ عاصمہ سرور کواس واقعے کا ذمہ دار قرار دے دیا گیا ہے ۔ دونوں ڈاکٹروں کے خلاف پیڈا ایکٹ کے تحت سزائیں تجویز کردی گئی ہیں۔

ذرائع کے مطابق چند ماہ قبل ٹی ایچ کیو ہسپتال رائےونڈ میں خاتون نے علاج نہ ملنے کے باعث ہسپتال کے مین دروازہ پر ہی بچے کو جنم دیا تھا جس پر حکومت نے ایم ایس ڈاکٹر عامر مفتی اور گائناکالوجسٹ کو معطل کرتے ہوئے انکوائری کے احکامات جاری کیے تھے۔ پراجیکٹ ڈائریکٹر آئی آر ایم این سی ایچ ڈاکٹر سید مختار احمد شاہ کو انکوائری افسر مقرر کیا گیا تھا۔ انکوائری افسر نے اپنی رپورٹ میں بچے کو سڑک پر جنم دینے کی ذمہ داری سابق ایم ایس ڈاکٹر عامر مفتی اورگائناکالوجسٹ عاصمہ سرور پر عائد کی تھی۔ انکوائری افسر نے ان دونوں ڈاکٹرز کے خلاف پیڈا یکٹ کے تحت معمولی سزائیں بھی تجویز کی ہیں سابق ایم ایس ڈاکٹر عامر مفتی کی تین انکریمنٹ ضبط کرنے اورگائناکالوجسٹ عاصمہ سرور کی تین انکریمنٹ کے ساتھ ملنے والا اضافی الاﺅنس ریکور کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔ پیڈاایکٹ کے تحت اب ایڈیشنل سیکرٹری ایڈمن پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کو ہیئرنگ افسر مقرر کیا گیا اوران دونوں ڈاکٹروں کو آخری شنوائی کا موقع دیا گیا ہے اگر یہ ڈاکٹر ہیرنگ افسر کو تسلی بخش جواب نہ دے سکے تو سزاﺅں کی منظوری کےلئے سمری وزیراعلیٰ پنجاب کو بھجوائی جائےگی جہاں سے منظوری کے بعد ان کی انکریمنٹ ضبط ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں

بحیرہ روم کی غذا دماغ کو تیز رکھنے میں مددگار قرار

شکاگو: ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ بحیرہ روم (میڈیٹیرین) کی غذا بڑھاپے میں ڈیمینشیا کی …