تیل وگیس ذخائر کی تلاش میں صوبوں کا کردار ختم کیے جانے کا امکان

اسلام آباد(میڈیا پاکستان) وفاقی حکومت کی جانب سے ملک میں تیل وگیس ذخائرکی تلاش کی سرگرمیوں اور مارکیٹنگ میں صوبوں کا کردار ختم کیے جانے کا امکان ہے۔وفاقی حکومت کی جانب سے ملک میں تیل وگیس ذخائرکی تلاش کی سرگرمیوں اور مارکیٹنگ میں صوبوں کا کردار ختم کیے جانے کا امکان ہے تاہم حتمی فیصلہ گیس کے شعبہ میں اصلاحات کیلئے قائم کمیٹی کی منظوری کی صورت ہوگا جس کیلیے تیارمنصوبہ آج وزیر اعظم شاہدخاقان عباسی کی زیر صدارت ہونے والے گیس کے شعبے میں اصلاحات کمیٹی کے اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔
’’ایکسپریس‘‘ کو دستیاب دستاویز کے مطابق آج ہونیوالے اجلاس میں پیش کیے جانیوالے مجوزہ منصوبے کے میں تیل و گیس کے شعبہ میں تیل و گیس کی تلاش کی تمام سرگرمیوں (اپ اسٹریم) اورریفائننگ کے شعبے (ڈاؤن اسٹریم) اور مارکیٹنگ میں صوبوں کا کردار ختم کرنیکی سفارش کی گئی علاوہ ازیں اس مجوزہ منصوبے کے تحت نئی تجویزکردہ پاکستان پٹرولیم ایکسپلوریشن اینڈ پروڈکشن ریگولیٹری اتھارٹی میں صوبوں کی نمائندگی کو بھی شامل نہیں کیا گیا۔
دستیاب دستاویزکے مطابق گیس کے شعبے میں اصلاحات کی کمیٹی کااجلاس وزیراعظم کی زیر صدارت آج دن دو بجے ہو گا، پاکستان پٹرولیم ایکسپلوریشن اینڈ پروڈکشن اتھارٹی تیل و گیس کی تلاش کیلیے قومی سطح پر بننے والی پالیسیوں قوانین اور معاہدوں کاجائزہ لے گی اوروقتاً فوقتاً وفاقی حکومت کو سفارشات فراہم کرتی رہیگی تیل وگیس کے ذرائع اور تیل وگیس کی تلاش کے حوالے سے ایک رپورٹ مرتب کرکے شائع کریگی نوتشکیل شدہ اتھارٹی تیل و گیس کی تلاش کے لیے کاروائیوں کے تمام انتظامی امور اور ریگولیشن کی ذمے دار ہو گی۔

یہ بھی پڑھیں

خام تیل کی عالمی قیمتیں کم ہوکر 82.87ڈالر بیرل ہوگئیں

اسلام آباد: خام تیل کی عالمی قیمتیں82.87ڈالر فی بیرل ہوگئیں جب کہ دوسری جانب اوگرا …