14سالہ لڑکی کی پراسرار انداز میں خودکشی

مانچسٹر…. ایک زمانہ تھا جب بچے اور لڑکے لڑکیاں بھی ہر قسم کے غم و فکر سے لاتعلق رہتے تھے مگر اب زمانہ بدل گیا ہے اور نئی نسل میں بھی یاسیت نے پنجے گاڑھنے شروع کردیئے ہیں۔ ایسا ہی کچھ یہاں اُس وقت دیکھنے میں آیاجب گریٹر مانچسٹر کے علاقے روشڈیل کی 14سالہ لڑکی شارلوٹ بیرون نے بڑے پُراسرار انداز میں خودکشی کی کوشش کی اور خودکشی سے قبل اس نے جان دینے کے اسباب بھی لکھ دیئے۔ یہ تو اچھا ہوا کہ اس کے بھائی کو کسی چیز کی ضرورت پیش آئی تو اس نے کپڑوں کی الماری کھولی جہاں شارلوٹ گلے میں پھندہ ڈالے نیم مردہ حالت میں کھڑی تھی۔ بہن کی یہ حالت دیکھ کر 20سالہ بھائی ٹائیگر نے چیخ پکار مچا دی اور لڑکی کو فوری طور پر اسپتال پہنچایاگیا۔ الماری کے پاس سے ایک ایسی ڈائری بھی ملی ہے جس میں اس نے اپنی خودکشی کے مختلف انداز کو ڈرائنگ کرکے رکھا تھااور لکھا تھا کہ وہ بس جان دینا چاہتی ہے کیونکہ وہ حد سے زیادہ موٹی اور وزنی ہوگئی ہے اسلئے اسے کوئی پسند نہیں کرتا۔ پولیس کا کہناہے کہ اس نے اس انتہائی اقدام سے قبل اپنے کسی دوست کو ایک ایس ایم ایس بھی کیا تھاجس میں لکھا تھا کہ وہ جان دینے جارہی ہے اور یہ ایس ایم ایس اطلاع کیلئے ہے مدد کیلئے نہیں۔ کہا جاتا ہے کہ شارلوٹ 12سال کی عمر سے خود اذیتی اوریاسیت میں مبتلا رہنے لگی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

امریکا میں سات فٹ لمبے اژدھے کا 100میل کا سمندری سفر

امریکا میں سمندری سفرکے شوقین اژدھے نے سومیل کا سفرطے کرلیا۔ امریکی خبررساں ادارے کے …