ہاتھ سے پکوڑے تلنے والا دکاندار

(عجیب وغریب ڈیسک /میڈیا 92نیوز ) کھولتے ہوئے تیل کا ایک چھینٹا بھی جسم پر پڑ جائے تو انسان درد سے بلبلا اٹھتا ہے لیکن بھارت میں سڑک کنارے پکوڑے بیچنے والے رام بابو کے کیا کہنے کہ یہ صاحب تو اپنا ہاتھ کھولتے ہوئے تیل میں ڈالتے ہیں اور انتہائی سکون کے ساتھ تلے ہوئے گرما گرم پکوڑے کڑاہی سے باہر نکال لیتے ہیں۔
جریدے ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق ریاست اتر پردیش کے شہر الہ آباد میں رام بابو ایک مشہور شخصیت کے طور پر پہچانے جاتے ہیں اور ان کے سٹال پر آنے والوں کو ان کے پکوڑے کھانے سے زیادہ دلچسپی انہیں گرم تیل میں ہاتھ ڈبوتے ہوئے دیکھنے میں ہوتی ہے۔ 60 سالہ رام بابو کا کہنا ہے کہ وہ گزشتہ 40 سال سے پکوڑے تلنے کے لئے کسی چمچے یا چھلنی کی بجائے اپنے ہاتھ استعمال کررہے ہیں اور اس تمام عرصے کے دوران ان کی جلد پر کبھی ہلکا سا جلن کا نشان بھی نہیں بنا۔ وہ کہتے ہیں کہ جب انہوں نے 20 سال کی عمر میں پکوڑے سموسے بیچنے کا کام شروع کیا تو کبھی تصور بھی نہیں کیا تھا کہ وہ اس قدر مقبول ہوجائیں گے۔


مزید جانئے: ’جسے اللہ رکھے اسے کون چکھے‘موبائل فون نے فرانسیسی شہری کی زندگی بچا لی
انہوں نے اس حیران کن معاملے کے آغاز کی دلچسپ تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ تقریباً 40 سال قبل ایک دن ان کے سٹال پر گاہکوں کا رش بہت زیادہ تھا تو انہوں نے بے دھیانی سے جلدی میں چھلنی پکڑنے کی بجائے اپنا ہاتھ ہی تیل میں ڈال کر پکوڑے نکال لئے۔ وہ کہتے ہیں کہ انہوں نے جلدی سے اپنا ہاتھ باہر کھینچا اور خدشہ تھا کہ یہ بری طرح جل گیا ہوگا لیکن وہ خود بھی یہ دیکھ کر حیران ہوئے کہ ان کا ہاتھ بالکل سلامت تھا۔ رام بابو کا کہنا ہے کہ اس دن کے بعد انہوں نے پکوڑے نکالنے کے لئے کبھی بھی چمچہ یا چھلنی استعمال نہیں کی بلکہ اپنے ہاتھ ہی استعمال کرتے ہیں۔

آج ان کی مقبولیت کا یہ عالم ہے کہ سارے بھارت میں ان کے گاہک پائے جاتے ہیں اور اکثر تو محض ان کا کرشمہ دیکھنے کے لئے آتے ہیں۔ ان کے ناقابل یقین ہنر کا نظارہ کرنے کے لئے آنے والوں کی تعداد اتنی بڑی ہوتی ہے کہ روزانہ 100 کلوگرام سے زائد پکوڑے بک جاتے ہیں۔ رام بابو کی شہرت پھیلنے کے بعد متعدد ڈاکٹر بھی ان کے پاس آئے اور ان کی جلد کے نمونے حاصل کرکے لے گئے لیکن اب تک کسی کو بھی یہ سمجھ نہیں آئی کہ ان کی جلد کے کھولتے ہوئے تیل سے محفوظ رہنے کی وجہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان میں انتخابات 2024 کے نتائج میں تاخیر، صارفین نے میمز بنا ڈالیں

پاکستان میں عام انتخابات 2024 کے نتائج کے طویل انتظار نے جہاں قومی اور عالمی …